حلال اور حرام پرندے (Permissible and Prohibited Birds in Islam)

Tahqeeqat-e- Islami. Vol. 30, Issue 4. (October-December 2011) Nabi Nagar, Aligarh, P.O.Box 93, India

Posted: 7 Sep 2016

See all articles by Mubasher Dr

Mubasher Dr

International Islamic University, Islamabad; Harvard Law School

Date Written: Oct.-Dec. 2011

Abstract

Urdu Abstract: اس مقالہ میں پرندوں کی حلت و حرمت کو فقہ اسلامی کی روشنی میں زیر بحث لایا گیا ہے۔ پرندے حیوانات کی ایک مشہور و معروف قسم ہے۔ یہ اپنے پروں کی وجہ سے دیگر تمام حیوانات سے الگ شناخت رکھتے ہیں۔ یہ الگ بات ہے کہ بعض پرندے اپنے پروں کی مدد سے اڑ نہیں سکتے، تاہم پرندوں کی بڑی تعداد پروں کی مدد سے اڑنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ اس مقالہ میں اس بات کو موضوعِ مطالعہ بنایا گیا ہے کہ فقہاء نے پرندوں کی حلت و حرمت کے سلسلہ میں کیا اصول و قواعد قائم کیے ہیں اور ان اصول و قواعد کی روشنی میں پرندوں کی حلت و حرمت کے سلسلہ میں کیا آراء قائم کی ہیں۔ پرندوں کی حلت و حرمت کے سلسلہ میں فقہاء نے ان کی درج ذیل تین قسمیں کی ہیں: شکاری پرندے؛ مردار خور پرندے اور غیر شکاری اور غیر مردار خور پرندے۔ فقہ مالکی میں مشہور اور راجح قول کے مطابق تمام پرندے حلال قرار دیے گئے ہیں۔ جمہور فقہاء یعنی حنفیہ، شافعیہ، حنابلہ اور ظاہریہ کے ہاں وحشی یا شکاری پرندوں کے بارے میں راجح موقف یہ ہے کہ یہ حرام ہیں۔ وہ پرندے جو فطرتی طور پر مردار یا نجاست خور ہیں‘ وہ بھی جمہور فقہاء کے نزدیک حرام ہیں۔ شکاری اور نجاست خور پرندوں کے علاوہ باقی تمام پرندے (یعنی تمام غیر شکاری اور غیر نجاست خور پرندے) فقہاء کے نزدیک حلال ہیں، البتہ شوافع اور حنابلہ نے اس قبیل کے ان پرندوں کو بھی حرام قرار دیا ہے جنہیں یا تو قتل کرنے کا یا پھر قتل نہ کرنے کا شریعت میں حکم دیا گیا ہے۔ نیز وہ پرندے بھی حرام ہیں جو خبیث ہیں۔ لیکن بعض پرندوں کے خبیث ہونے کے تعین میں فقہی اختلاف رائے موجود ہے۔

English Abstract: This article deals with the lawfulness or otherwise position of birds in Islamic Law and, hence, examines the juristic opinions of various Sunni schools of Islamic law with respect to the birds that are classified by the Muslim jurists into the following three categories, 1)the birds of prey; 2)filth eater birds and 3)otherwise birds. The first two categories of the birds are declared prohibited as well as the rest of them are declared lawful by the majority of the mainstream Sunni jurists. However, the Sahfi and the Hanbali jurists also maintained that if an animal or bird has been ordered by the law giver to be killed by stating its name (like the raven (white crow), the kite) or conversely if an animal or bird has been forbidden to be killed (like bee, and magpie, etc.), that would also be regarded prohibited (haram).

Suggested Citation

Dr, Mubasher, حلال اور حرام پرندے (Permissible and Prohibited Birds in Islam) (Oct.-Dec. 2011). Tahqeeqat-e- Islami. Vol. 30, Issue 4. (October-December 2011) Nabi Nagar, Aligarh, P.O.Box 93, India, Available at SSRN: https://ssrn.com/abstract=2807755

Mubasher Dr (Contact Author)

International Islamic University, Islamabad ( email )

H-10 Islamabad
Islamabad, Capital territory 44000
Pakistan

HOME PAGE: http://iri.iiu.edu.pk/index.php/iri/content/id/11

Harvard Law School ( email )

1875 Cambridge Street
Cambridge, MA 02138
United States

Here is the Coronavirus
related research on SSRN

Paper statistics

Abstract Views
690
PlumX Metrics