سیرت نگاری میں صحت و اِستناد کے جدید مباحث (Recent Discussions on the Question of Authenticity of the Sources in Sĩrah Writing)

Fikr-o Nazar. Vol. 49, Issues 2 and 3. (October-December 2010 and January-March 2011) Islamic Research Institute, Islamabad.

20 Pages Posted: 12 Sep 2016

See all articles by Mubasher Dr

Mubasher Dr

International Islamic University, Islamabad; Harvard Law School

Date Written: March 1, 2011

Abstract

Urdu Abstract: اس بات سے مجال انکار نہیں کہ سیرت کے مآخذ و مصادر میں صحیح و مستند روایات کے پہلو بہ پہلو کمزور روایات کا بھی خاصا انبار موجود ہے اس لیے کہ متقدمین نے جب حضور نبی کریمﷺ کی سیرت پر لکھنا شروع کیا تو انہیں اس سلسلہ میں جو کچھ رطب و یابس ملا وہ اسے جمع کرتے چلے گئے۔ تاہم محدثین نے سیرت سے متعلقہ مواد کو اپنے کڑے معیار سے گزارنے کے بعد ہی قبول کیا لیکن اس سے سیرت رسولؐ کا تفصیلی مطالعہ کرنے والوں کے لیے تشنگی کا احساس پیدا ہوتا تھا، اس لیے کہ محدثین روایات کے اخذ و انتخاب میں اَحکامی و غیر احکامی کے فرق کو ملحوظ رکھتے اور احکامی روایات کو فوقیت دیتے ہوئے ان کی قبولیت کے لیے قبولیت روایت کا معیار ہمیشہ سخت رکھتے تھے جبکہ سیرت کا ایک خاصا حصہ ایسا ہے جو احکام کی قبیل سے نہیں ہے اور ظاہر ہے اس کے لیے کمزورمعیار بھی گوارا ہو سکتا ہے(جیسا کہ خود بعض محدثین کی تصریحات اس سلسلہ میں موجود ہیں) مگر ایسی کمزور روایات کو محدثین اپنے مجموعہ ہائے حدیث میں شامل کرنا ان مجموعہ ہائے حدیث کے استناد کو کمزور بنا دینے کے مترادف سمجھتے تھے۔ دور جدید میں جب مستشرقین نے اسلام اور پیغمبر اسلام کو ہدف بنا کر اپنی علمی سرگرمیوں کا آغاز کیا اور مسلمانوں کے مآخذ و مصادر ہی سے ایسا لٹریچر تیار کرنا شروع کیا جس سے خود بعض مسلمان بھی شکوک و شبہات کا شکار ہونے لگے تو مسلمان سیرت نگاروں کے ہاں اس رجحان کے احساس میں اضافہ ہوا کہ سیرت پر جو کچھ لکھا جائے وہ قطعی مستند ہونا چاہیے تاکہ سیرت کے مآخذ میں موجود غیر مستند مواد کی بنیاد پر جو اعتراضات قائم ہوتے ہیں ان کی بنیاد خود ہی ختم ہو جائے۔ اس احساس کا ایک مظہر یہ بھی ہے کہ بعض لوگوں نے صرف قرآن کی روشنی میں سیرت مرتب کرنے کی کوشش کی۔ بعض اہل علم نے قرآن کے ساتھ صرف صحیح احادیث کے دائرہ میں رہتے ہوئے سیرت پر کتابیں لکھیں۔ بعض اہل علم نے سیرت پر موجود تمام دستیاب مواد سے اخذ و انتخاب کا بیڑہ اٹھایا۔ دور جدید میں بہت سی ایسی کتب سیرت سامنے آئی ہیں جو مستند سیرت نگاری کے ان اسالیب کی ترجمانی کرتی ہیں مثلاً اردو میں: ’’سیرت النبیؐ‘‘ (از: شبلی نعمانی؍سید سلیمان ندوی)، ’’اصح السیر‘‘(از: عبدالرؤف دانا پوری) وغیرہ۔ عربی میں: السیرۃ النبویۃ الصحیحۃ،(از: د۔اکرم ضیاء العمری)، السیرۃالنبویۃ فی ضوء المصادر الاصلیۃ، (از: مھدی رزق اللہ)، صحیح السیرۃالنبویۃ،(از: ابراھیم العلی)، وغیرہ۔ سنی اہل علم کے علاوہ بعض شیعہ اہل علم نے بھی اس سلسلہ میں ضخیم مواد مرتب کر کے پیش کیا ہے، جیسے الصحیح من سیرۃ النبی الاعظمؐ، (از: سید جعفر مرتضی العاملی)۔ زیر نظر مقالہ ان میں سے عربی اور اردو کی چند اہم کتابوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک تنقیدی مطالعہ پیش کرتا ہے۔

English Abstract: The classical Sĩrah literature is an amalgam of both authentic and inauthentic reports, as described by Hadĩth scholars. The logic behind compilation of these narratives was to avoid the loss of any minor information if available about the life of Holy Prophet (peace be on him). Despite its significance this approach also has some disadvantages. Inauthentic reports have been a constant source to defame and criticize Islam and the personality of the last Prophet (peace be on him). This aspect of Sĩrah writing has generated a new debate about classical sources and their critical evaluation was considered indispensable by Muslim scholars. In this article the author has made an attempt to analyze and evaluate this aspect of Sirah writing.

Note: Downloadable document is in Urdu.

Suggested Citation

Dr, Mubasher, سیرت نگاری میں صحت و اِستناد کے جدید مباحث (Recent Discussions on the Question of Authenticity of the Sources in Sĩrah Writing) (March 1, 2011). Fikr-o Nazar. Vol. 49, Issues 2 and 3. (October-December 2010 and January-March 2011) Islamic Research Institute, Islamabad. , Available at SSRN: https://ssrn.com/abstract=2810007

Mubasher Dr (Contact Author)

International Islamic University, Islamabad ( email )

H-10 Islamabad
Islamabad, Capital territory 44000
Pakistan

HOME PAGE: http://iri.iiu.edu.pk/index.php/iri/content/id/11

Harvard Law School ( email )

1875 Cambridge Street
Cambridge, MA 02138
United States

Here is the Coronavirus
related research on SSRN

Paper statistics

Downloads
171
Abstract Views
1,283
rank
200,973
PlumX Metrics